آفٹر شاکس آنے کا خطرہ ۔۔۔۔۔ ماہرین ارضیات

تازہ ترین— 26 اکتوبر کے زلزے کے بعد بھی آفٹر شاکس آتے رہے لیکن ماہرین  ارضیات کا کہنا ہے کہ آفٹر earth quakeشاکس 15 سے 20 دن تک جاری رہنے کا امکان ہے-اس لیے جتنی احطیاط ہو سکے وہ کی جانی چاہیے کیونکہ آفٹڑ شاکس آنے کا امکان ہے-

قومی زلزلہ پیما مرکز کے مطابق سوات ، اپر دیر ، مالاکنڈ اور دیگر علاقوں میں پہلی بار زلزلے کے جھٹکے دوپہر ایک بج کر 45 منٹ پر پھر محسوس کئے گئے جس کی شدت ریکٹر اسکیل پر 3.9 ریکارڈ کی گئی ہے، دوبارہ دوسری مرتبہ زلزلے کے جھٹکے دوپہر 2 بج کر10 منٹ پر محسوس کئے گئے ہیں-

شدید زلزلے کے بعد ملک کے مختلف حصوں میں آفٹر شاکس کا سلسلہ اتوار کو بھی جاری رہا ¾ ڈھائی گھنٹوں کے دوران 3 مرتبہ زلزلے کے جھٹکے محسوس کئے گئے ¾ زلزلے کے جھٹکوں کے دور ان شہری کلمہ طیبہ اور درود شریف کا ورد کرنے لگےاور لوگ اپنے گھروں اور آفس سے باہر نکل آئے-

ماہرین ارضیات کا کہنا ہے کہ زلزلے کے بعد کم شدت کے آفٹر شاکس معمول کی بات ہیں اور اس کا سلسلہ مزید 15 سے 20 روز تک جاری رہے گامگر پھر بھی احتیاط کی ضرورت ہے اس بارے میں حتمی طورپر تو کچھ بھی نہیں کہاجاسکتا کہ آفٹر شاکس کے دوران کوئی شدید قسم کازلزلہ بالکل نہ آئے اس لیے آپ اس کے بارے میں محطاط رہے کسی دور جگہ پر آوٹنگ پر نہ جائے-

Leave a Reply