کراچی میں مصنوعی بارش۔۔۔۔

Artificial rain in Karachi….

تازہ ترین)   کراچی اس وقت پانی کے بحران سے دوچار ہے جس پہ قابو پانے کے لئے کراچی میں مصنوعی بارش کروانے پہ غور کیا جا رہا ہے۔ مزید تفصیلات یہ ہیں کہ صوبائی وزیر بلدیات ناصر شاہ کی ہدایت پر واٹر  بورڈ نے مصنوعی بارش کا ابتدائی منصوبہ تیار کر لیا ہے، ایم ڈی واٹر بورڈ مصباح الدین فرید نے بتایا ہے ابھی بھی کراچی میں پا نی کا بحران جاری ہے۔ کیونکہ اس سال مون سون سیزن  میں بارشیں کم ہونے  کی وجہ سے حب ڈیم مکمل نہ بھر سکا اور اس وقت حب ڈیم 35 ملین گیلن یومیہ پانی فراہم کر رہا ہے جس وجہ سے مصنوعی بارش کا منصوبہ زیر غور ہے۔ وزیر بلدیات ناصر شاہ نے اسکی اجازت دے دی ہے اس کے علاوہ دیگر میگا منصوبوں پر بھی کام جاری ہے۔واٹر بورڈ ابتدائی منصوبہ جلد سیکرٹری لوکل گورنمنٹ کو منظوری کے لئے جمع کروایا جائے گا۔اس کے علاوہ وزیر اعلیٰ  سندھ نے بھی اس کی منظوری لی جائے گی، منظوری ملتے ہی واٹر بورڈ، سندھ حکومت، پورٹ اینڈ شپنگ، محکمہ مو سمیات، ایوی ایشن اور دیگر متعلقہ اداروں کے جامع منصوبہ بندی تیار کی جائے گی۔  ایم ڈی واٹر بورڈ کا کہنا ہے کہ کہ اگر منظوری دے دی گئی  تو حب ڈیم کے اردگرد بارش کر وا کے ڈیم کو بھر دیا جائے گا ۔ محکمہ موسمیات کے مطابق اس طرح کی مصنوعی بارش کے لئے مختلف قسم کے بادلوں کی ضرورت ہوتی ہے،اور جب  بادل نمودار ہوتے ہیں تو ان پر ہوائی جہاز سے سوڈیم   کلورائیڈ کا اسپرے کر کے مصنوعی بارش کروائی جاتی ہے، اس طرح سے دنیا کے 50 ممالک میں مصنوعی بارش کے طریقے  کو استعمال کیا جاتا ہے۔ لیکن ذرائع کے مطابق مون سون سیزن ختم  ہو چکا ہے، اکتوبر  نومبر میں  بادلوں کی مطلوبہ مقدار  دستیاب نہیں ہوتی، اس لیے سردیوں  میں اس کی کامیابی کے امکانات کم ہیں۔

Leave a Reply