پیرس میں ہونے والے حملے پر علماء کا فتوی

تازہ ترین — فرانس میں ہونے والے حملے نے لوگوں کے دل دہلا دیئے اور لوگوں میں خوف ہراس پھیلا ہوا ہے پیرس میں ہونے والےparis attack حملے پر پاکستانی علماء نے فتوی دیاان کا کہنا تھا کہ انسانیت کا قتل عام ہے داعش یا اس قسم کی تنظیمیں جو بھی کارروائیاں کررہی ہیں جو بھی معاملات کررہی ہیں وہ ان کی خود ساختہ سوچ کا ایک مظہر ہے اسلام کا جو بنیادی مقصد ہے وہ قطعاً اس قسم کی کارروائیوں کی حمایت نہیں کرتاہفرانس کے دارالحکومت پیرس میں ہونیوالے حملوں سے متعلق پاکستان کے پچاس سے زائد علماءنے ایک مشترکہ فتویٰ جاری کردیاہے-

 فتویٰ دینے والے علماءدین میں شامل ڈاکٹر راغب حسین نعیمی نے کہاکہ اسلام قطعاً ایسے حملوں کی اجازت نہیں دیتا جس میں بے گناہ اور معصوم لوگوں کی جان چلی گئی ۔ تنظیم اتحاد امت کی طرف سے علماءدین کا ایک بین الاقوامی فورم بنانے کا مطالبہ بھی کیاگیا تاکہ دہشتگرد تنظیموں بشمول طالبان اور داعش کے انتہاپسندانہ موقف کی نفی اور توڑ کیاجائے ۔

پیرس میں ہونے والا حملے کا تعلق اسلام سے نہیں ہے- اس فتوے میں فرانس کے دارالحکومت میں ہونیوالے حملوں کی مذمت کرتے ہوئے انہیں حرام اور خلاف شریعت قرارپایاہے ۔  فتویٰ فتوی میں کہا گیا کہ جو کچھ پیرس کے اندر ہوا ہے اس کا سلام کے ساتھ کوئی تعلق نہیں اور اسلام قطعاً ایسے حملوں کی حمایت نہیں کرتا ہے-

Leave a Reply