پی ٹی آئی کے ایم پی اے کے خلاف مقدمہ

Case fired against pti mpa

ملتان(تازہ ترین) تحریک انصاف کے رکن صوبائی اسمبلی ظہیر الدین علی زئی سمیت 13افراد کے خلاف اغوا برائے تاوان کا مقدمہ درج کرلیا گیا۔ اس کے جواب  میں ظہیر الدین علی زی کا یہ کہنا ہے کہ وہ بے گناہ ہیں اور یہ جو کچھ بھی کیا جا رہا ہے صرف اور صرف ان کی ساکھ کو خراب کرنے کا ایک بہانہ ہے۔ملتان میں تھانہ چہلک کی پولیس کے مطابق ملتان کے شہری مہر منیر کو 28مارچ 2014میں رحیم ٹاون سے مبینہ طور پر اغوا کیا گیا تھا اور اغواء کرنے والوں نے اس  کی رہائی کے بدلے میں  ایک کڑور 50 لاکھ روپے تاوان کا مطالبہ کیا گیا۔ مہر منیر نے بیان  دیا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے رکن پنجاب اسمبلی ظہیر الدین علی زئی نے اسے اغوا کیا تھا۔ اور جب اس کے اہل خانہ نے  یک کروڑ 20لاکھ روپے ظہیر الدین علی زئی کے اکاؤنٹ میں منتقل کیے تو اس کو 14 اپریل 2014 کو رہا کیا گیا۔اس بیان  پر  پی ٹی آئی کے   ایم پی اے ظہیرالدین سمیت 13افراد کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے۔ اس پر  ظہیرالدین علی زئی کا کہنا ہے کہ وہ بے گناہ ہیں۔

 

Leave a Reply