کیا ریحام خان اور عمران خان کی طلاق ان کا ذاتی معاملہ ہے؟

 imran reham divorceعمران خان اورریحام خان کی شادی 8جنوری2015کوہوئی اور تقریباً10 ماہ رشتہ ازدواج میں منسلک رہے ۔عمران خان نے 8 کروڑ روپے حق مہر ادا کردیا ۔ طلاق کےمعاملہ پرایک معاہدہ طے پایا تھا.طلاق کئی روزقبل ہوگئی تھی ۔ معاہدے کےمطابق طلاق کا اعلان آئندہ جنرل الیکشن سےقبل نہیں ہونا تھا ۔ ناگزیر وجوہات پراعلان فوری کرنا پڑا۔طلاق کے فورا بعد مختلف شخصیات نے الزام تراششی شروع کر دی جن کے جواب میں  عمران خان نے تین ٹویٹس میں کہا ہے: ’یہ میرے، ریحام اور ہمارے خاندانوں کے لیے دکھ کا مرحلہ ہے۔ میں سب کو ہماری پرائیویسی کے احترام کی درخواست کرتا ہوں۔ میرے دل میں ریحام اور ان کے اخلاق اور کردار کی اور اس عزم کی بہت زیادہ عزت ہے کہ وہ غیر مراعات یافتہ طبقوں کی مدد کرنا چاہتی ہیں۔‘دوسری جانب ریحام خان نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں کہا ہے کہ ’ہم نے اپنے راستے جدا کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے اور طلاق کے لیے رجوع کیا ہے۔دونوں کے درمیان طلاق ایک ایسے وقت میں ہوئی ہے جب عمران خان بلدیاتی انتخابات اور خیبر پختونخوا کے زلزلے کے لیے مختلف علاقوں کے دورے کر رہے ہیں۔مقامی میڈیا پر ایک بڑا سوال یہ اٹھایا جا رہا ہے کہ اس علیحدگی سے عمران خان کی سیاست پر کیا اثرات پڑیں گے۔یہاں سوال یہ پیدا ہوتا ہے  کہ کیا ریحام خان اور عمران خان کی طلاق ان کا ذاتی معاملہ ہے  یا لوگوں کا اس معاملہ میں بولنا ٹھیک ہے ؟

Leave a Reply