نئے امیر کے انتخاب پر افغان طالبان میں پُھوٹ پڑ گئی

تازہ ترین) نئے امیر  ملا اختر منصورکے انتخاب پر افغان طالبان میں  اختلافات کھل کر سامنے آ گئے ہیں۔  ذرائع سے مطابق  ملا اختر منصور کے مخالفینFight among Taliban groups in Afghanistan نے اپنی نئی شوریٰ بنانے کا اعلان کیا ہے ۔  ناراض طالبان گروپس نے ملا اختر منصور کی بطور امیر تقرری  کوغیر اصولی اور خلاف شریعت قرار دیا ہے۔  نئے امیر کی تقرری کے بعد طالبان گروپوں میں پہلی جھڑپ ہوئی جس میں ملا عمر کے بیٹے سمیت9 افراد  ہلاک ہوگئے ۔ خود ملا عمر کے خاندان نے بھی ملا اختر منصور کی بیعت سے انکار کر دیا ہے ۔

افغان  پارلیمنٹ کے ڈپٹی سپیکر نے بتایا کہ ملا عمر کے بیٹے ملا  یعقوب کو کوئٹہ میں ایک قاتلانہ حملے میں ہلاک کیا گیا ہے کیونکہ  وہ اپنے والد کی وفات کے بعد جانشین مقرر ہونے کی کوشش کر رہے تھے ۔  جبکہ افغان طالبان کے ترجمان ملا حسن نے ملا یعقوب کی ہلاکت کی خبر کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ  ملا عمر کے خاندان سے رابطہ  میں ہیں اور اُن کی 2 دن قبل ہی ملا یعقوب سے بات ہوئی ہے ۔

Leave a Reply