ماہرین کی بڑے شہروں سے متعلق اہم پیش گوئی

Important prediction of experts about earthquakeلاہور(تازہ ترین )آج آنے والے زلزلے نے پاکستان کے لوگوں کو ہلا کر رکھ دیا۔ماہرین ارضیات نے بتایا ہے کہ پاکستان کا دو تہائی رقبہ کسی نہ کسی فالٹ لائن پر ہے،فالٹ لائن کے حساب سے پاکستان کو19ویں زونز میں تقسیم کیا گیا ہے۔سات زونز ایسے ہیں جہاں شدید زلزلوں کا خدشہ ہے ۔نجی چینل پر بات کرتے ہوئے ماہرین نے بتایا کہ ملک کا45فیصد علاقہ یوریشین اور چالیس فیصد انڈین ٹیکٹونک پر واقع ہے۔پاکستان یوریشین انڈین فلیٹ کے اندر چار ملی میٹر سالانہ کے حساب سے دھنس رہی ہے۔ماہرین کا کہنا تھا کہ سندھ میں گھوٹکی،سکھر،نواب شاہ،پنجاب میں چولستان،بہاولپور، خیبر پختوانخواہ میں جنوبی وزیر ستان،بلوچستان میں ڈیرہ بگٹی،آزاد کشمیر کا سارا علاقہ زلزلے کی فالٹ لائنز پر واقع ہے۔ماہرین نے مزید بتایا کہ کراچی سے لیکر آواران تک ساحلی پٹی خطرناک ترین فالٹ لائنوں پر ہے۔ساحلی علاقہ دو مرتبہ شدید زلزلے کے بعد سونامی کی تباہ کاریوں سے دوچار ہے جبکہ اسلام آباد نہایت خطرناک فالٹ لائن میں باﺅنڈری تھرسٹ پر واقع ہے اورایوان صدر،وزیر اعظم ہاﺅس،سیکرٹریٹ بھی انتہائی خطرناک فالٹ لائن پر ہیں

Leave a Reply