عامر خان کے بعد ہندو انتہا پسندی کا نشانہ کون؟

تازہ ترین : بھارت میں بڑھتی ہوئی انتہا پسندی تو حد کو پہنچ گئی ہے- ایک ایک کر کے ہندو انتہا پسندی کا نشانہ بن رہے ہیں- دیکھتے ہیamir khan دیکھتے انتہا پسندی کا طوفان کھڑا ہو گیا ہے-   عامر خان کے حق میں معروف گلوکار آسکر ایوارڈ یافتہ موسیقار اے آر حمان بھی بول پڑے ہیں –

بھارت میں مودی سرکار کی سرپرستی میں بڑھتی انتہا پسندی کا شکار لوگوں میں بالی ووڈ کے بادشاہ اور پرفیکشنسٹ کے بعد آسکر ایوارڈ یافتہ موسیقار اے آر حمان بھی شامل ہیں۔

ممبئی میں ایک تقریب کے دوران میڈیا سے بات کرتے ہوئے اے آررحمان نے کہا کہ عامرخان نے بھارت میں بڑہتی انتہا پسندی کے حوالے سے جو بات کی وہ بالکل صحیح ہے۔ کچھ عرصے قبل انہوں نے بھی عامرخان کی طرح صورتحال کا سامنا کرنا پڑاتھا،انہوں نے کہا کہ بھارتی انتہاپسندی نہیں بلکہ دنیا کی بہترین تہذیب کے علمدار ہیں، ہمیں انتہا پسندی کے بجائے اپنی تہذیب کا پرچارکرنا چاہیئے۔

موسیقار نے انتہاپسندی کے خلاف ایوارڈز واپس کرنے والوں کی حمایت میں کہا کہ احتجاج اس اندازمیں کرنا چاہیئے کہ جس سے مثال قائم کی جا سکے کہ جہاں بھارت میں تشدد کے بغیر بھی انقلاب برپا کیے جاسکتے ہیں اور ایوارڈز واپسی ایک شاعرانہ طریقہ ہے۔

واضح رہے کہ عامر خان نے 2 روزقبل ایک پروگرام میں کہا تھا کہ ملک میں رونما ہونے والے کئی واقعات نے انہیں اور بالخصوص ان کی اہلیہ کو ملک چھوڑنے کے حوالے سے غورکرنے پرمجبورکردیا ہے تاہم وہ خود بھی ملک میں بڑھتے ہوئے عدم تحفظ کے احساس کو شدت سے محسوس کررہے ہیں۔

Leave a Reply