کیا آپ ایسی عادت کا شکار تو نہیں؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟

تازہ ترین—- موٹاپا جو آج کل ایک بہت بڑا مسلہ بنتا جا رہا ہےیکن آپ اس سے بچ سکتے ہیں جس کو نظر اندازsleeping habits کر کے آپ موٹاپے سے بچ سکتے ہیں- امریکی محقیقین کے مطابق زیادہ دیر تک سونانوجوانوں کے لیے موٹاپےکا سبب بن سکتا ہے- کیونکہ نوجوانو ں میں موٹے ہونے کے امکانات

زیادہ ہوتے ہیں-  ایک نئی ریسرچ  سے معلوم ہوا ہے کہ نو عمری میں رات دیر سے  سونے  کی عادت نوجوانوں کے وزن پر اثر انداز ہوتی ہے- یونیورسٹی آف کیلی فورنیا بارکلے کے محققین کو نیند اور باڈی ماس انڈیکس یا ’بی ایم آئی‘ کے درمیان تعلق کا علم ہوا ہے۔ بارکلے یونیورسٹی کے محققین نے 3,300 امریکی نوجوانوں اور بالغان کی صحت کے اعداد و شمار پر مبنی ایک قومی مطالعے کا تجزیہ کیا۔ ان کا کام امریکی رسالے ‘جرنل سلیپ’ کے اکتوبر کے شمارے میں شائع ہوا  ہے۔ مصنف پروفیسر لارین اسارناو   محققین نے بتایا کہ انسان کی حیاتیاتی گھڑی سرکیڈین ردھم بلوغت کی عمر کے شروع سے سیعام طور پر سونیکیسائیکل کو آگے بڑھا دیتی ہے۔ – انہوں نے لکھا کہ اندازا پانچ سالہ مدت کے دوران ہر گھنٹے کی نیند کینقصان کیے بدلے میں ایک بالغ نوجوان کے باڈی ماس انڈیکس (بی ایم آئی) میں 2.1 پوائنٹس کا اضافہ ہوا تھا۔ بادی ماس انڈیکس معیاری وزن کا پیمانہ ہے جس میں قد کے لحاظ سے وزن کا کلو گرام میں تعین کیا جاتا ہے، ایک صحت مند بالغ شخص کا بی ایم آئی 18.5 سے 24.9 تک ہو سکتا ہے اور ’بی ایم آئی‘ زیادہ ہونے کا مطلب قد اور وزن اور میں اضافہ کا سبب بن سکتا ہے۔ مشاہدے کے دوران امریکی محققین نے 1994 کے ایک سٹڈی کا تجزیہ کیا، جو نوجوانوں کے سونے کی عادات اور ان کے رہن سہن پر مشتعمل تھا -محققین نے بتایا کہ انسان کی حیاتیاتی گھڑی سرکیڈین ردھم بلوغت کی عمر کےآغاز سیعام طور پر سونیکیسائیکل کو آگے بڑھا دیتی ہے۔ محققین کا کہنا تھا کہ رات کو نو عمری سے جلدی سونا آگے چل کر ایک  صحت مند زند گی کی نشانی ہے-اس لیے جلدی سونا صحت کے لیے انتہائی اچھا عمل ہے-

Leave a Reply