ہلدی کے استعمال سے رکھے صحت کا خیال۔۔۔۔۔۔

تازہ ترین— ہلدی کھانوں کی جان ہر ڈش کی پہچان ہے- یوں تو ہلدی کو ہر کوئی کھانوں میں استعمال کرتا ہے-ہلدی کے استعمال سے رکھے صحت کا خیال۔۔۔۔۔۔ ہلدی جو کہ رنگت میں پیلی اور اس کا تعلق ادرک کی فیملی سے ہے- ہلدی فریش بھی مل جاتی ہے لیکن ہلدی زیادہ تر پاوَڈر کی شکل میں استعمال کی جاتی ہے – ہلدی کا استعمال آپ اپنی روزمرہ زندگی میں کرتے ہیں- یونیورسٹی آف نیو یارک کے ماہرین نفسیات نے ایک تحقیق میں بتایا ہے کہ دماغ میں موجود خوف ختم کرنے کے لیے کسی بڑے نفسیاتی علاج اور مہنگی ادویات کی ضرورت نہیں بلکہ اس سے چھٹکارا پانے کیلے  اپنے کھانوں میں ہلدی کو شامل کرلیں جو دماغ میں موجود خوف کے عنصر کوختم کردیتی ہے بلکہ ہلدی ذہن میں ابھرنے والے نئے خوف اور خدشات کو بھی روکتی ہے۔ تحقیق کے سربراہ پروفیسر گلین شیفے کے مطابق جو لوگ ٹرامیٹک اسٹریس ڈس آرڈر اور دیگر نفسیاتی عدم توازن کا سے دو چار ہیں یا کسی خوف میں مبتلا ہوں تو ایسے افراد کے لیے ہلدی سے بنائی گئی غذائیں انتہائی کارآمد ہیں-

سائنس دانوں نے امید ظاہر کی ہے کہ اس تحقیق سے ان لوگوں کے علاج میں مدد ملے گی جو نفسیاتی عدم توازن کا شکار ہیں۔ یونیورسٹی آف کیلیفورنیا میں ایک اور تحقیق میں کہا گیا ہے کہ دماغ کی ساخت میں خوف پیدا کرنے والے ایک بادام کی شکل والی ساخت کو دریافت کیا گیا ہے جسے امیگ ڈالا کا نام دیا گیا ہے اور یہ انسان میں پریشانی، ڈپریشن اور گھبراہٹ کو پیدا کرتا ہے جب کہ ہلدی دماغ کے اس عنصر کو ختم کرنے میں مدد دیتی ہے۔ ہلدی کی اس افادیت کو ٹیسٹ کرنے کے لیے ایک تجربے کے دوران جب چوہوں کو ایک خاص آواز سنائی گئی تو جن چوہوں کو عام غذا کھلائی گئی وہ فوری آواز سنتے ہی خوفزدہ ہوکر ٹھہر گئے جب کہ جن چوہوں کو ہلدی ملائی غذا دی گئی وہ اس آواز سے خوفزدہ نہیں ہوئے ۔

اس کے علاوہ اگر شہد کی مکھی کاٹ لیں یا کوئی اور کیڑا یا کوئی اور کیڑا تو اس جگہ پر فوری ہلدی کا لیپ چونے میں ملا کر لگا دیں- یہ زہر چوس کر سوجن ختم کرتی ہے  اگر گلا بہت خراب ہو یا زکام تیز ہو تو ایک گلاس گرم دودھ میں آدھا چائے کا چمچ ملا کر تو زکام ختم ہو جاتاہے- آج کل کے موسم میں اس کا استعمال فائدہ مند ہے-

Leave a Reply