پاکستان کی حمایت میں بیان دے دیا

تازہ ترین) بھارتی اداکار نصیر الدین شاہ کا کہنا ہے کہ کہ لوگ انڈیا اور پاکستان میں دوریا ں نہیں بلکہ مماثلت چاہتے ہیں۔ نصیر الدین شاہ نے یہ با ت پاکستان کی سابق وزیرِ خارجہ خورشید محمود قصوری کیnaseer uddin shah کتاب کی توریب رونمائی میں شرکت کے موقع پر کہی۔

نصیر الدین شاہ کاکہنا تھا  میری خواہش ہے کہ میں پاکستان کے سابق وزیر خارجہ اور امن کے سفیر خورشید محمود قصوری کا اسی طرح استقبال کرتا جس طرح سے مجھے پاکستان میں خوش آمدیدکہا جاتا ہے۔ میں چاہتا ہوں کہ مذاکرات کے ذریعے امن قائم کیا جائے اور اختلافات کو ہوا دے کر دنگا فساد کرنے والوں کو روکا جائے۔ نصیر الدین شاہ کا مزید کہنا تھا کہ میں  کئی مرتبہ کام کے سلسلے میں یا سیر و سیاحت کی غرض سے  بھارت سے پاکستان جا چکا ہوں اوروہاں کبھی بھی میرے کسی کام میں مداخلت نہیں کی گئی اور نہ ہی مجھے روکا گیا ہے۔  پاکستان جاکر میں نے کبھی سکیورٹی بھی نہیں لی۔

نصیر الدین شاہ کا حالیہ بیان  بھارتی شدت پسندتنظیم شیو سینا کے خلاف ایک خاموش احتجاج بھی ہے۔

یاد رہے کہ شیو سینا نے سابق  پاکستانی وزیر خارجہ خوشید قصوری کی کتاب رونمائی کی تقریب کے منتظم  کلکرنی کے چہرے پر سیاہی مل دی تھی۔ تاہم کلکرنی نے کسی بھی قسم کا دباؤ قبول کرنے سے انکار کردیا اور اسی حالت میں پریس کانفرنس منعقد کرکے اعلان کیا کہ تقریب اپنے مقررہ وقت پر ہی شروع ہو گی۔

Leave a Reply