پاکستانی کاسر قلم کر دیا گیا۔۔۔

Pakistani’s head was cut off…

ریاض(تازہ ترین) سعودی عرب میں منگل کے روز منشیات کی اسمگلنگ کے جرم میں ایک پاکستانی کا سر قلم کر دیا گیا، وزارتِ داخلہ کے ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ نعمت اللہ بخش پر اپنے جسم کے اندر منشیات سمگل کرنے کا جرم ثابت ہوا تھا۔سعودی عرب میں زیادہ تر سزائے موت پر عمل درآمد کیلئے سر قلم کیا جاتا ہے۔ اس پر انسانی حقوق کے کارکنان نے سعودی عرب کے اس فیصلے پر سوال اٹھایا ہے اور کہا ہے کہ سعودی حکومت  کو منشیات کے کیسوں میں سزائے موت نہیں سنائی جانی چاہیئے،اے ایف پی کے اعدادوشمار کے مطابق نعمت اللہ بخش 138 ویں غیر ملکی ہیں جن کو اس سال سعودی عرب میں سزائے موت دی گئی ہے،  ۔گزشتہ سال یہ تعداد 87 تھی۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل کا کہنا ہے کہ گزشتہ سال سعودی عرب سزائے موت دینے والا تیسرا بڑا ملک تھا۔سعودی قوانین کے تحت قتل، منشیات سمگلنگ، مسلح ڈکیتی، ریپ اور مرتد ہونے پر سزائے موت دی جا سکتی ہے۔2011 کے بعد سے سعودی عرب میں ہر سال اوسطاً 80 افراد کو سزائے موت دی گئی ہے۔ اور سعودیہ کے انہی قوانین کے پیشِ نظر کل ایک پاکستانی کا سر قلم کر دیا گیا ۔

Leave a Reply