پیرس کی تاریخ کا اافسوسناک واقع

پیرس (تازہ ترین) گزشتہ رات فرانسیسی دارالحکومت میں دہشت گردوں نے اس ملک کی تاریخ کا سب سے بڑا اور منظم حملہ کیا جس کے بعد فرانس میں حالتParis terrorism incident, terrorists attacked جنگ کا سماں ہے اور اب تک کی اطلاعات کے مطابق 160 سے زائد لوگ ہلاک ہوچکے ہیں۔ دہشت گردوں نے چھ مختلف مقامات پر حملہ کیا جن میں پیرس میں واقع بٹاکلان کنسرٹ ہال بھی شامل تھا جہاں سینکڑوں افراد کو یرغمال بنا کر ان پر اندھا دھند فائرنگ شروع کردی گئی۔ یہ افراد یہاں ایک میوزک کنسرٹ میں شامل تھے اور انہیں میں بینجمن کازینووف نامی شخص بھی شامل تھا جس نے اس اندوہناک واقعے کے دوران سوشل میڈیا ویب سائٹ فیس بک پر رونگٹے کھڑے کر دینے والی پوسٹس بھیجیں۔زخمی بینجمن نے اپنی پہلی پوسٹ میں لکھا ”یہاں ہر طرف گولیاں برسائی جارہی ہیں، یہاں کچھ افراد زندہ بچے ہیں وہ سب کو ایک ایک کرکے کاٹ رہے ہیں۔ “ پھر اگلی پوسٹ میں لکھا ”میں زندہ ہوں۔ مجھے بس کچھ زخم آئے ہیں۔ یہاں بربادی ہے، ہر طرف لاشیں بکھری پڑی ہیں۔“ ایک اور پوسٹ میں بینجمن نے بتایا ” میں ابھی بھی بٹاکلان میں ہوں، میں پہلے فلور پر ہوں اور بری طرح زخمی ہوں۔“

Leave a Reply