ترکی روس کا دشمن نمبر ون ہے سربراہ لبرل ڈیموکریٹک پارٹی

    تازہ ترین :  روسی لبرل ڈیموکریٹک پارٹی کے سربراہ ولاديمير جيرنووسكیے نے صدر پیوٹن سے کہا ہے کہ ایٹم بم گرا کر کم ازکمrussia city استنبول کو تباہ کردیا جائے جہاں 90 لاکھ افراد ررہتے ہیں۔ انہوں نے ترکی کی جانب سے اپنی فضائی حدود میں داخل ہونے والے ایس یو 24 طیارے کو مارگرانے کے فیصلے کو احمقانہ بھی قرار دیا۔

روسی لبرل ڈیموکریٹک پارٹی کے سربراہ ولاديمير جيرنووسكیے نے ترکی کو روس کا دشمن نمبر ایک قرار دیتے ہوئے صدر پیوٹن کو مشورہ دیا ہے کہ ترکی پر ایٹم بم گراکر اسے صفحہ ہستی سے مٹادیا جائے۔ ان کا کہناتھا کہ ترکی کو اس دنیا سے ختم کر دیا جائے- ولاديمير جيرنووسكیے نے صدر پیوٹن سے کہا ہے  کہ  ترکی کو ختم کرنے کے لیے اس پر ایٹم بم گرایا جائے-

لبرل ڈیموکریٹک پارٹی کے سربراہ کا بیان ترکی کے صدر رجب طیب اردوان کے اس بیان کے بعد آیا ہے جس میں انہوں نے روس کو خبردار کیا تھا کہ وہ  آگ سے نہ کھیلے۔واضح رہے کہ ترکی نے فضائی حدود کی خلاف ورزی پر روس کا جنگی طیارہ مار گرایا تھا جب کہ حکام کا کہنا تھا کہ  ہراس طیارے کو مار گرایا جائے گا جو ہماری فضائی حدود کی خلاف ورزی کرے گا۔

ولاديمير جيرنووسكیے  نے کہا کہ نیوکلیئر حملے سے استنبول کو بہت آسانی سے تباہ کیا جاسکتا ہے۔ استبول کے پاس موجود آبنائے (باسفورس) پر ایک ایٹم بم گرانے سے استنبول کو مٹایا جاسکتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ  اس سمندری راستے پر بم گرنے سے 10 سے 15 میٹر بلند لہریں پیدا ہوں گی جس سے استنبول میں سیلاب آجائے گا اور 90 لاکھ افراد ہلاک ہوجائیں گے۔اور ترکی اس دنیا سے ختم ہو جائے گا-

Leave a Reply